مردوں کو ہونے والے 5 کنسر

ان میں سے کچھ کینسر مردوں کو ہوتے ہیں جبکہ کچھ مردوں اور عورتوں دونوں کو بھی ہو سکتے ہییں۔ جبکہ کچھ صرف عورتوں میں ہوتے ہیں۔ درج زیل میں مردوں کو ہونے والے 5 کینسرز کی تفصیل دی گیؑ ہے۔

  1. پراسٹیٹ کینسر prostate cancer (پانچ سال میں بچ جانے کی شرح 98٪)
  2. ٹیسٹیکولر کینسر testicular cancer  (پانچ سال میں بچ جانے کی شرح 96٪)
  3. قضیب کا کینسر penile cancer (پانچ سال میں بچ جانے کی شرح 78٪)
  4. بڑی آنت کا کینسر colorectal cancer (زیادہ تر مردوں میں ۔ پانچ سال میں بچ جانے کی شرح 64٪)
  5. پھیپھڑوں کا کینسر lung cancer (زیادہ تر مردوں میں ۔ پانچ سال میں بچ جانے کی شرح 15٪)
  6. جگر کا کینسر liver cancer (اموات 5٪)
  7. خون کا کینسر leukemia (اموات 4٪)
  8. خوراک کی نالی کا کینسر esophagus cancer (اموات 4٪)
  9. گردوں کا کینسر kidney cancer (اموات 3٪)
  10. مثانے کا کینسر bladder cancer (اموات 3٪)

نوٹ

جب کویؑ گلٹی دس لاکھ خلیوں پر مشتمل ہوتی ہے تو اسکا وزن 1 گرام کا ہزارواں حصہ ہعنی 1 ملی گرام ہوتا ہے اور یہ چھوٹے موٹے سکین سے نظر بھی نہیں آتی۔ اب یہی گلٹی صرف 10 بار تقسیم ہو جاۓ تو 1 ارب کینسر کے خلیات پر مشتمل ہو جاتی ہے اور اسکا وزن 1 گرام ہو جاتا ہے۔ اب یہ کیمرے کی آنکھ سے نظر بھی آتی ہے اور محسوس بھی کی جا سکتی ہے۔ (بشکریہ حکیم ظارق محمود)

مردوں کی جنسی بیماریوں میں کینسر کے بعد سب سے مہلک سوزاک اور آتشک ہیں

مردوں کو ہونے والے 5 کنسر

America) courtesy of e-Science Central)

صرف عورتوں میں ہونے والے کینسرز

پراسٹیٹ کینسر

یہ مردوں میں ہونے والا سب سے عام کینسر ہے۔ صرف امریکہ میں ہر سال 186،000 نۓ مریض پراسٹیٹ کے کینسر کے آتے ہیں اور سالانہ 33720 لوگ مر جاتے ہیں۔ تاہم اس میں مبتلا ہونے کے بعد بچنے کی شرح 98٪ ہے۔ وجوہات میں عمر رسیدگی، موریثیت وغیرہ شامل ہیں۔ مزید ٹفصیل کے لیے کلک کریں۔

پھیپھڑوں کا کینسر

سب سے خطرناک سمجھا جانے والا کینسر یہی ہے۔ کیونکہ اس میں مبتلا ہونے کے بعد بچ جانے کی شرح صرف 15٪ ہے۔ جبکہ 85٪ لوگ مر جاتے ہیں۔ سب سے زیادہ مریض بھی اسی موزی مرض کا شکار ہوتے ہیں۔ اندازاً صرف امریکہ میں 2014 کے سال 2،26،000 مریض شکار ہوۓ جن میں سے 1،16،500 مرد تھے اور ان میں سے بھی 87،500 مرد مریض اسی سال یا اگلے سال مر گۓ۔ حقیقت تو یہ ہے کہ اس قاتل کینسر سے جتنے مرتے ہیں اتنے تو مجموعی طور پر چھاتی، کولون اور پراسٹیٹ کے کینسر سے نہیں مرتے۔ وجوہات میں سب سے بڑی وجہ سگریٹ نوشی اور ماحولیاتی الودگی ہے۔ عورتوں کی نسبت مرد ڈھایؑ گنا زیادہ اس مرض کا شکار ہوتے ہیں۔ علامات میں مسلسل کھانسی، تھوک یا بلغم کے ساتھ خون، سانس پھولنا وغیرہ۔ مزید ٹفصیل کے لیے کلک کریں۔

کولون کا کینسر

اسکو بڑی آنت اور مقعد کا کینسر بھی کہہ سکتے ہیں۔ بد پریضی، ریشہ دار غزاؤں کی بجاۓ فاست فوڈ، پھلو سبزیوں کا استمعال نہ کرنا، عمر اور مورثیت بنیادی وجوہات ہیں۔ اس میں مبتلا ہونے والے مریضوں میں سے 64٪ کسی نہ کسی طرح بچ جاتے ہیں۔ مزید ٹفصیل کے لیے کلک کریں۔

خیصوں کا کینسر

اسکو testicular cancer بھی کہتے ہیں اور جیسا کہ نام سے ظاہر ہے کہ صرف مردوں کو ہونے والا کینسر ہے۔ تاہم جنسی اعضاء میں سے زیادہ تر کینسرز کا پتا جلدی چل جانے کو وجہ سے علاج تھیک اور شافی ہو جاتا ہے۔ اس میں مبتلا ہو کر مرنے والوں کی شرح محظ 4٪ ہے۔ ابھی تک اسکی کویؑ وجہ دریافت ہی نہیں ہو سکی جبکہ کہا جاتا ہے کہ پیدایؑشی نقصل ہو سکتا ہے۔

آلہء تناسل کا کینسر

اسکو penile cancer بھی کہتے ہیں امریکہ میں 2012 میں اس کینسر کے 1570 مریض دیکھے گۓ اور صحت یابی کی شرح 78٪ ہے۔ اسکی وجوھات میں HPV وایؑرس اور ختنے نہ کرنا شامل ہیں۔

مردوں کو ہونے والے 5 کنسر

 

 

 

 

 

 


انتسابات:

  • ایوری ڈے ہیلتھ EverydayHealth.com
  • حکیم طارق محمود چغتایؑ

 



Comments are Closed